بدھ, ستمبر 22, 2021
بدھ, ستمبر 22, 2021
HomeUrduبہادر شاہ ظفر کے بیٹے کی بچپن کی تصویر کو اکبر بادشاہ...

بہادر شاہ ظفر کے بیٹے کی بچپن کی تصویر کو اکبر بادشاہ کا بتاکر سوشل میڈیا پر کیا گیا شیئر

ٹویٹر پر راج پتانی نامی یوزر نے دوتصاویر شیئر کی ہیں۔جس میں ایک بچہ اور دوسرا نوجوان شخص ہے۔بچے کی تصویر کے اوپر اصلی اکبر اور جوان شخص کی تصویر کے اوپر وام پنتھیوں کا اکبر لکھا ہوا ہے۔مزید لکھا ہے کہ “وام پنتھی ۔۔۔ نےہمیں پڑھایا کی اکبر بادشاہ عظیم شخص تھا۔جبکہ سچائی اس کے برعکس ہے

راج پتانی کے ٹویٹر پوسٹ کا آرکائیو لنک۔

سناتنی ہندو واہنی کے فیس بک پوسٹ کاآرکائیو لنک۔

سدھاکر پربھوناتھ تیواری کے پوسٹ کاآرکائیو لنک۔

Fact Check/Verification

سوشل میڈیاپر وائرل تصاویر کی سچائی جاننے کےلئے ہم نےتصویر نمبر ایک جسے اصلی اکبر کہا جارہاہے۔اسے جب ہم نے ریورس امیج سرچ کیا تو ہمیں نیوز18ہندی ،ڈاؤن نیوز اور عالمی کے ویب سائٹ پر بچے کی تصویر کے ساتھ خبریں ملیں۔رپوٹ کے مطابق جس بچے کو مغل بادشاہ جلا الدین اکبر کی اصلی تصویر بتایا جارہا ہے۔وہ در اصل مغلیہ سلطنت کے آخری بادشاہ مرزا بہادرشاہ ظفر کے بیٹے مرزاشاہ عباس ہیں۔

پھر ہم نے جب نوجوان شخص کی تصویر کو ریورس امیج سرچ کیا تو ہمیں زی ٹی وی 5 اور ٹائمس آف انڈیا کے ویب سائٹ پر وائرل تصویر سے متعلق جانکاری ملی۔رپوٹ کے مطابق تصویر میں نظر آرہا شخص ٹی وی سیریل جودھااکبر میں اکبر کے کردار کو اداکرنے والے رجت ٹوکس ہیں۔

وہیں جب ہم نے اکبر بادشاہ کے بارے میں سرچ کیا تو ہمیں بی بی سی اردو اور آج تک نیوز پر دو مضمون ملے۔جس میں مغل شہنشاہ جلاالدین محمد اکبر کو سبھی مذاہب کے خیرخواہ رہنمابتایا گیا ہے۔

Conclusion

نیوزچیکر کی تحقیقات سے پتاچلا کہ جن تصاویر کو مغلیہ سلطنت کے بادشاہ جلا الدین اکبر کے بچپن اور وام پنتھی بتایا جارہا ہے۔ان میں بچے کی تصویر بہادرشاہ ظفر کے بیٹے مرزاشاہ عباس اور دوسری جودھا اکبر سیریل میں اکبر کا کردار ادا کرنے والے رجت ٹوکس کی ہے۔

Result:False

Our Sources

N18:https://hindi.news18.com/photogallery/knowledge/bahadur-shah-zafar-the-last-mughal-who-lead-the-revolt-against-british-in-1857-1559512-page-9.html

D:https://www.dawnnews.tv/news/1089671

A:https://www.alamy.com/stock-photo-mirza-shah-abbas-son-of-bahadur-shah-ii-142927667.html

Zee5:https://www.zee5.com/tvshows/details/jodha-akbar/0-6-447

BBC:https://www.bbc.com/urdu/articles/cl02eep1rjqo

نوٹ:کسی بھی مشتبہ خبرکی تحقیق،ترمیم یا دیگرتجاویز کے لئے ہمیں نیچے دئیے گئے واہٹس ایپ نمبر پر آپ اپنی رائے ارسال کر سکتےہیں۔

 9999499044

Mohammed Zakariyahttps://newschecker.in/ur
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his Master in Mass communication and Journalism from Lucknow University.Lucknow

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular