جمعرات, دسمبر 8, 2022
جمعرات, دسمبر 8, 2022

HomeFact Checkکنیڈین مجرم خاتو پر پولس کی تشدد کے ویڈیو کو فرانس اور...

کنیڈین مجرم خاتو پر پولس کی تشدد کے ویڈیو کو فرانس اور مسلمانوں سے جوڑکر کیاجارہاہے شیئر

فرانس میں جمہوریت کی یہ علم بردار پولیس ایک مسلمان خاتون کے سر سے زبردستی دوپٹہ اتار کر اُسے تشدد کا نشانہ بنا رہے ہیں۔ کیا ہم سب اب بھی فرانسیسی اشیاء کا بائیکاٹ نہیں کرینگے؟؟؟ سب شیئر کریں۔

Viral Video From Facebook

فرانس کے حوالے سے کیا ہے وائرل پوسٹ؟

سوشل میڈیا پر ایک منٹ کاایک ویڈیو خوب گردش کررہاہے۔جس میں ایک پولس اہلکار خاتون کو اپنے تشدد کا نشانہ بنا رہاہے۔یوزر کا دعویٰ ہے کہ خاتون مسلم ہے اور فرانس کی پولس محض اسلئے اس پر ظلم کررہی ہے کہ وہ حجاب پہنے ہوئی ہے۔درج ذیل میں وائرل پوسٹ کے آرکائیو موجود ہیں۔

محمد سعد کھٹک کے پوسٹ کا آرکائیو لنک۔

ضیاء الحق کے پوسٹ کا آرکائیو لنک۔

وکیل کے پوسٹ کا آرکائیو لنک۔

https://www.facebook.com/farhan.abbasi.50702769/videos/180606450314323

اللہ کا پیارا نامی ٹویٹر یوزر کاآرکائیو لنک۔

Fact check / Verification

پولس کی خاتون پر تشدد کے ویڈیو کو ہم نے کچھ اہم ٹولس کی مدد سے گوگل ریورس امیج سرچ کیا۔اس دوران اسکرین پر وائرل ویڈیو کے حوالے سے کئی لنک فراہم ہوئے۔جس میں ویڈیو کو 2017کا بتایا گیا ہے۔

1st Finding

مذکورہ جانکاری سے پتاچلا کہ وائرل ویڈیو پرانی ہے۔پھر ہم نے کچھ کیورڈ سرچ کئے۔جہاں ہمیں غیرملکی نیوز ڈیلی میل،نیویارک پوسٹ،سی ٹی وی نیوز اور سی بی سی نیوز ویب سائٹ پر 26،27 اور 30 اکتوبر 2020 کی خبریں ملیں۔جس کے مطابق وائرل ویڈیو کنیڈا کے کیلگری شہر کی ہے۔جس میں ایک پولس والا خاتون مجرم پر تشدد کررہاہے۔رپورٹ کے مطابق ویڈیو 2017 کا ہے۔تشدد کررہے پولس والے پر کیس چل چکا ہے۔ویڈیو میں نظر آرہی لڑکی کا نام دالیہ کافی(Dalia Kafi)اور کانسٹیبل کا نام ا لیکس ڈن (Alex Dunn) ہے۔

2nd Finding

وہیں سرچ کے دوران660نیوز نامی یوٹیوب چینل پر وائرل ویڈیو ملا۔جس میں بھی یہی جانکاری دی گئی ہے کہ کنیڈا کے شہر کیلگری میں خاتون کو الیکس ڈن نامی کانسٹیبل نے 3سال پہلے تشدد کا شکار بنایا تھا۔رپوٹ کے مطابق کانسٹیبل نے دالیہ کافی کا اسکارف ہٹانے کی کوشش کی تھی۔لیکن منع کرنے پر اسے زمین پر پٹخ دیا تھا۔

Final Finfiding

Conclusion

نیوزچیکر کی تحقیقات میں ثابت ہوتا ہے کہ وائرل ویڈیو کا فرانس سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔بلکہ یہ ویڈیو کنیڈا کے کیلگری شہر کا ہے۔جہاں مجرم خاتون کو کانسٹیبل الیکس ڈن نے اپنے تشدد کا شکار بنایا تھا۔بتادوں کہ یہ ویڈیو2017 کی ہے اور اس معاملے میں کانسٹیبل پر کیس بھی درج ہوچکا ہے۔

Result:False

Our Sources

DailyMail:https://www.dailymail.co.uk/news/article-8893213/Surveillance-footage-shows-Calgary-cop-slamming-handcuffed-black-woman-face-floor.html

Newyorkpost:https://nypost.com/2020/10/30/shocking-video-captures-cop-body-slamming-woman-in-handcuffs/

CTVNews:https://calgary.ctvnews.ca/video-released-of-violent-2017-arrest-as-part-of-calgary-police-officer-s-assault-trial-1.5163824

CBCNews:https://www.cbc.ca/news/canada/calgary/calgary-police-alex-dunn-assault-trial-video-1.5777524

660News:https://www.youtube.com/watch?v=P8H__V25BJg

نوٹ:کسی بھی مشتبہ خبرکی تحقیق،ترمیم یا دیگرتجاویز کے لئے ہمیں نیچے دئیے گئے واہٹس ایپ نمبر پر آپ اپنی رائے ارسال کر سکتےہیں۔

 9999499044

Mohammed Zakariya
Mohammed Zakariya
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation in Mass Communication & Journalism from Lucknow University.
Mohammed Zakariya
Mohammed Zakariya
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation in Mass Communication & Journalism from Lucknow University.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular