جمعرات, دسمبر 1, 2022
جمعرات, دسمبر 1, 2022

HomeFact Checkآل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے رام مندر کی جگہ بابری...

آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے رام مندر کی جگہ بابری مسجد بنانے کی نہیں دی دھمکی

آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے دھمکی دی ہے کہ رام مندر کی جگہ پھر بابری مسجد بنائیں گے،آج نہیں تو کل۔

وائرل پوسٹ
Viral Post from Facebook

کیا ہے وائرل پوسٹ؟

فیس بک پر آکاش ٹھاکر نے پشپیندر کلشریٹھ نامی پیج پر شیئر کیا ہے۔آرکائیو لنک۔

سنجیوکمار کشواہا نے بھی فیس بک پر ایک تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا ہے کہ مسلم پرسنل لا بورڈ نے کھلی دھمکی دی ہے کہ موقع ملتے ہی ایودھیا سے ہٹادیں گے رام مندر۔آرکائیو لنک۔

نیوز ویب پر بھی دھمکی کی خبریں ہوئی شائع

بیسٹ ہندی نیوز ویب سائٹ نے خبر شائع کی ہے کہ بورڈ نےدھمکی دی ہے موقع ملتے ہی ایودھیا میں رام مندر بنائیں گے۔آرکائیو لنک۔

ڈیلی ہنٹ پر بھی مذکورہ دعوے والی خبر شائع کی گئی ہے۔آرکائیو لنک۔

ٹویٹر پر بھی دعوے والا پوسٹ شیئر کیا گیا ہے

بی جے پی لیڈر کپل مشرا نے مسلم پرسنل لابورڈ کے پریس ریلیز کو شئیر کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ بورڈ نے ہندؤں کو دھمکی دی ہے۔مشرا کے ٹویٹ کو 11518 لوگوں نے ہمارے آرٹیکل لکھنے تک ری ٹویٹ کیا ہے۔آرکائیو لنک۔

ہیمنش نامی یوزر نے مذکورہ دعوے والا ٹویٹ کیا ہے۔آرکائیو لنک۔

Fact Check/Verification

مسلم پرسنل لابورڈ کے حوالے سے کئے گئےدعوے کو پڑھنے کے بعد ہم نے اپنی ابتدائی تحقیقات شروع کی۔سب سے پہلے ہم نے کچھ کیورڈ سرچ کیا۔اس دوران ہمیں نیوز18 اردو ,سیاست اور قومی آواز پر بورڈ کے بیان کے حوالے سے5اگست کی ایک خبر ملی۔جس کے مطابق آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے بیان جاری کرتے ہوئےکہا ہے کہ بابری مسجد ہمیشہ مسجد رہے گی۔ غاصبانہ قبضہ سے حقیقت ختم نہیں ہو جاتی۔اسلامی شریعت کی روشنی میں جہاں ایک بار مسجد قائم ہوجاتی ہے وہ تا قیامت مسجد رہتی ہے۔ لیکن ہمیں کہیں بھی یہ نہیں ملا کہ بورڈ نے کہا ہوکہ موقع ملتے ہی ایودھیا میں رامندر ہٹاکر بابری مسجد بنائیں گے۔

First Finding

سرچ کے دوران ہمیں بوڑ (AIMPLB) کا ایک ٹویٹ ملا۔جس میں بھی کہیں یہ ذکر نہیں کیا گیا ہے کہ رام مندر ہٹاکر بابری مسجد بنائیں گے۔البتہ ٹویٹ کے ذریعے بوڑ نے یہ ضرور کہا ہے کہ مسلمانوں کےلیے آیاصوفیا ایک مثال ہے۔مسلمانوں کو چاہیے کہ وہ صبر کرے۔

https://twitter.com/AIMPLB_Official/status/1290666820089913344
2nd Finding

ان سبھی تحقیقات کے باوجود ہمیں تسلی نہیں ملی تو ہم نےبورڈ کے جنرل سیکریٹری مولانا ولی رحمانی کو فون کال کیا لیکن انہوں نے کچھ بھی بولنے سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ میں اپنا بیان بھیج رہا ہوں۔تین گھنٹے گذرنے کے بعد بھی انہوں نے اپنا بیان نہیں بھیجا۔پھر ہم نے بورڈ کے وکیل ظفریاب جیلانی سے فون پر رابطہ کیا اور وائرل خبر کے بارے میں سوال کیا تو انہوں نے ایودھیا میں رام مندر ہٹاکر بابری مسجد والی بات کو سرے سے خارج کرتے ہوئے کہا ہے بورڈ نے ایساکوئی بیان یا دھمکی نہیں دی ہے۔البتہ مسلمانوں کو آیا صوفیا کا مثال ضرور پیش کیا ہے۔

پھر ہم نے بورڈ کے ترجمان مولانا عمرین محفوظ رحمانی سے رابطہ کیا اور ان سے وائرل پوسٹ کے حوالے سےسوال کیا تو انہوں نے کہا کہ یہ بیمار ذہنیت کے لوگ ہیں جو بورڈ کے بیان کو توڑ مروڑ کر پیش کررہے ہیں۔جو ایسا کررہے وہ اس کی ذمہ دار ہیں۔بورڈ غور کرے گا کہ ان کے بارے میں کیا کاروائی کی جائے؟

نیوزچیکر کی ٹیم وائرل پوسٹ کے ساتھ تصویر کی تحقیقات کی تو دی پریولینٹ کی رپورٹ سے پتا چلا یہ تصویر اس وقت کی ہے جب بورڈ کےوکیل ظفریاب جیلانی نے ایودھیا معاملے پر نظرثانی کی عرضی سپریم کورٹ میں داخل کیا تھا۔

Conclusion

نیوزچیکر کی تحقیقات میں یہ ثابت ہوتا ہے کہ مسلم پرسنل لا بورڈ نے آیودھیا کے حوالے سے کسی بھی طرح کی دھمکی نہیں دی ہے اور ناہی یہ کہا ہے کہ ایودھیا میں رام مندر ہٹاکر بابری مسجد بنائی جائے گی۔بورڈ کے ترجمان عمیر رحمانی نے کہا ہے کہ بیان کو توڑ مروڑ کر پیش کیا گیا ہے۔بورڈ غور کرے گا کہ ان کے بارے میں کیا کاروائی کی جائے؟

Result:Misleading

Our Sources

News18Urdu: https://urdu.news18.com/news/nation/south-india-ayodhya-ram-mandir-asaduddin-owaisi-says-babri-masjid-will-always-remain-mosque-na-313010.html

Siasat Urdu: https://urdu.siasat.com/news/%D8%A8%DA%BE%D9%88%D9%85%DB%8C-%D9%BE%D9%88%D8%AC%D9%86-%D9%BE%D8%B1-%D9%BE%D8%B1%D8%B3%D9%86%D9%84-%D9%84%D8%A7-%D8%A8%D9%88%D8%B1%DA%88-%D8%B3%D8%AE%D8%AA-%D9%86%D8%A7%D8%B1%D8%A7%D8%B6-%D9%85-1236426/

Qaumiawaz: https://www.qaumiawaz.com/national/no-need-to-be-heartbroken-situations-dont-last-forever-statement-of-aimplb

Twitter: https://twitter.com/AIMPLB_Official/status/1290666820089913344

Theprevalentindia: https://www.theprevalentindia.com/aimplb-to-file-review-petition-against-ayodhya-verdict-in-dec-first-week/

Direct Contact: Advocate Zafaryab jilani, spokesperson AIMPLB Umrain mahfooz Rahmani  

Mohammed Zakariya
Mohammed Zakariya
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation in Mass Communication & Journalism from Lucknow University.
Mohammed Zakariya
Mohammed Zakariya
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation in Mass Communication & Journalism from Lucknow University.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular