جمعہ, دسمبر 2, 2022
جمعہ, دسمبر 2, 2022

HomeFact Checkافغانستان کی برف باری کی تصویر کو کراچی کا بتا کر سوشل...

افغانستان کی برف باری کی تصویر کو کراچی کا بتا کر سوشل میڈیا پر کیاجارہاہے شیئر

کراچی میں شدید سردی کی پہلی برف باری کی وجہ سے ایم اے جناح روڈ پر 3 فٹ تک برف باری ہوئی۔جس کی وجہ سے کئی گاڑیاں پھنس گئی ہیں۔

کراچی میں برف باری کے حوالے سے کیا ہےوائر ل دعویٰ؟

سوشل میڈیا پر ایک تصویر خوب گردش کررہی ہے۔جس میں سڑک برف سے ڈھکی ہوئی نظر آرہی ہے۔یوزرس کا دعویٰ ہے کہ وائرل تصویر پاکستان کے کراچی کی ہے۔بتادوں کہ یہ تصویر 24 اور 25 نومبر کو بھی سوشل میڈیا کے معروف پلیٹ فارم ٹویٹر اور فیس بک پر شیئر کی جاچکی ہے۔درج ذیل میں آرکائیو لنک موجود ہیں۔

پلائی مالاکنڈ ایجنسی کے پوسٹ کاآرکائیو لنک۔

فیس بک پر میمس بائی شیخ کے پوسٹ کا آرکائیو لنک۔

https://www.facebook.com/javedarmani.n.3/posts/2761044527471411

خان باب کے ٹویٹر پوسٹ کا آرکائیو لنک۔

https://twitter.com/Silent_deserts/status/1331674600191758336

Fact check / Verification

سوشل میڈیا پر برف باری کی جس تصویر کو کراچی کا بتایا جارہاہے۔اس حوالے سے ہم نے سب سے پہلے تصویر کو ریورس امیج سرچ کیا۔اس دوران ہمیں ہمیں افغانستان مائی پیشن(Afghanistan My Passion ) نامی آفیشل فیس بک ہینڈل پر وائرل تصویر ملی۔جس کے مطابق یہ تصویر افغانستان کے کابل کی ہے۔بتادوں کہ یہ پوسٹ 9فروری 2019 کی ہے۔

https://www.facebook.com/Ariyana.Afghanistan/photos/a.525765674198869/1984300555012033/

وائرل تصویر کے حوالےسے ہم نے مزید کیورڈ سرچ کیا۔اس دوران ہمیں امان صداقت نامی انسٹاگرام ہینڈل پر5 فروری2019کا ایک پوسٹ ملا۔جس کے کیپشن میں لکھا ہے کہ سردیوں کے موسم میں دارالامان روڈ کابل کا منظر۔ وہیں سرچ کے دوران امان صداقت کے فیس بک وائرل تصویر ملی۔

جب ہم نے گوگل میپ پر داروالامان روڈ کابل سرچ کیا ۔جہاں ہمیں پتاچلا کہ واقعی افغانستان میں اس نام سے روڈ موجود ہے۔

سرچ کے دوران ہمیں نیو یارک ٹائمس پر شائع 2017 کی ایک خبر ملی۔جس میں بھی کابل کی دارالامان روڈ کی تصویر کو دیکھا جا سکتا ہے۔

Conclusion

نیوزچیکر کی تحقیقات سے یہ ثابت ہوتاہے کہ وائرل  تصویر افغان کے دارالحکومت کابل کی ہے۔ جو کہ گذشہ سال ایک افغان فوٹوگرافر  امان صداقت نے لی تھی اور اسے فیس بک پر پوسٹ بھی کیا تھا۔

Result:False

Our Sources

AfghanistanMyPassion:https://www.facebook.com/Ariyana.Afghanistan/photos/a.525765674198869/1984300555012033/?type=3

Aman:https://www.instagram.com/p/BtfvLXaFI0b/

Aman:https://www.facebook.com/amanullahsedaqat/posts/2281449995198687

Maphttps://www.google.com/maps/place/Kabul,+Afghanistan/@34.518044,69.190529,3a,103.3y/data=!3m8!1e2!3m6!1sAF1QipOZHWB1rT24AM2FYwNaWHuMHQhv1IANGhLWRqmB!2e10!3e12!6shttps:%2F%2Flh5.googleusercontent.com%2Fp%2FAF1QipOZHWB1rT24AM2FYwNaWHuMHQhv1IANGhLWRqmB%3Dw203-h119-k-no!7i720!8i425!4m8!1m2!2m1!1zINqp2KfYqNmEINqp24wg2K_Yp9ix2KfZhNin2YXYp9mGINix2YjaiCA!3m4!1s0x38d1694c3c1e6d49:0xebdf473578214429!8m2!3d34.5553494!4d69.207486

NYtimes:https://www.nytimes.com/2017/03/19/world/middleeast/kabul-afghanistan-gunfire-politicians.html

نوٹ:کسی بھی مشتبہ خبرکی تحقیق،ترمیم یا دیگرتجاویز کے لئے ہمیں نیچے دئیے گئے واہٹس ایپ نمبر پر آپ اپنی رائے ارسال کر سکتےہیں۔

 9999499044

Mohammed Zakariya
Mohammed Zakariya
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation in Mass Communication & Journalism from Lucknow University.
Mohammed Zakariya
Mohammed Zakariya
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation in Mass Communication & Journalism from Lucknow University.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular