ہفتہ, دسمبر 10, 2022
ہفتہ, دسمبر 10, 2022

HomeFact Checkکیا بھارت کے گجرات میں ویکسین لگانے سے جانوروں کی ہوئی موت؟...

کیا بھارت کے گجرات میں ویکسین لگانے سے جانوروں کی ہوئی موت؟ جانیں وائرل ویڈیو کی سچائی

Claim

ان دنوں سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو شیئر کرکے یہ دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ “یہ ویڈیو بھارت کے گجرات کی ہے جہاں ویکسین لگانے سے سبھی جانوروں کی موت ہو گئی تھی”۔

بھارت کے گجرات میں ویکسین لگانے سے جانوروں کی نہیں ہوئی موت۔
Courtesy:twitter @Lsfislamabad_

Fact

اس ویڈیو کی حقیقت جاننے کے لئے ہم نے سب سے پہلے ویڈیو کو کیفریم میں تقسیم کیا اور اس کا ریورس امیج سرچ کیا۔ اس دوران ہمیں نیوز 24 آن لائن اور بھاسکر ڈاٹ کام پر اس ویڈیو کے کیفریم کے ساتھ شائع خبریں ملیں۔ دونوں ہی خبروں میں اس تصویر کو بیکانیر کے ایک ڈمپنگ یارڈ کا بتایا گیا ہے۔ جہاں لمپی وائرس سے مری ہوئی ہزاروں گائیوں کو ڈمپ کیا گیا تھا۔ رپورٹ میں یہ بھی واضح کیا گیا ہے کہ اب تک ملک کی کئی ریاستوں کی 10 لاکھ سے زائد گائیوں کو لمپی وائرس اپنی چپیٹ میں لے چکا ہے۔

اس کے علاوہ ہمیں این ڈی ٹی وی پر بھی اسی سلسلے میں شائع 15 ستمبر 2022 کی ایک رپورٹ ملی۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ بیکانیر میں لمپی وائرس سے مری گائیوں کو ڈمپ کرنے کا بتا کر جو تصویر شیئر کی جا رہی ہے، سرکاری ملازمین نے اسے گمراہ کن قرار دیا ہے۔

Courtesy:NDTV

اب ہم نے اپنی ری سرچ میں مزید اضافہ کیا اور یوٹیوب پر کچھ کیورڈ سرچ کیا۔ تب ہمیں موجو اسٹوری نامی ویری فائیڈ یوٹیوب چینل پر یہی ویڈیو ملی۔ ویڈیو کی تفصیلات میں بھی بتایا گیا ہے کہ بیکانیر انتظامیہ نے دینک بھاسکر کی رپورٹس کو گمراہ کن قرار دیا ہے۔ انتظامیہ کا کہنا ہے کہ یہ جگہ مردہ جانوروں کے تصرف کے لئے ہی ہے۔ یہاں روزانہ ہزاروں کی تعداد میں مردہ جانور ملیں گے۔ بیکانیر کے ضلع کلکٹر نے کہا کہ یہ علاقہ گِدھوں کے لئے وقف ہے۔

Courtesy:YouTube/MOJO Story

اس کے علاوہ ہمیں راجستھان ڈیپارٹمنٹ آف انفارمیشن اینڈ ریلیشنس کے آفیشل فیکٹ چیک ٹویٹر ہینڈل پر ملا۔ جس میں دینک بھاسکر کی رپورٹ کو گمراہ کن قرار دیا ہے۔

اس طرح ہماری تحقیقات میں واضح ہوا کہ یہ ویڈیو بیکانیر کے ڈمپنگ یارڈ کی ہے نہ کہ بھارت کے گجرات میں ویکسین لگانے کے بعد جانوروں کی ہوئی اموات کی ہے۔

Result: False

Our Sources

Media Report Published on News24 on 07 Sep 2022
Media Report Published on Dainik bhaskar on 12 days ago
Media Report Published on NDTV on 07 Sep 2022
YouTube Video Report Published By MOJO Story on 9 days ago
Tweet by @Diprfactcheck on 07 Sep 2022

کسی بھی مشکوک خبر کی تحقیقات، تصحیح یا دیگر تجاویز کے لیے ہمیں واٹس ایپ کریں: 9999499044 یا ای میل: [email protected]

Mohammed Zakariya
Mohammed Zakariya
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation in Mass Communication & Journalism from Lucknow University.
Mohammed Zakariya
Mohammed Zakariya
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation in Mass Communication & Journalism from Lucknow University.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular