جمعہ, ستمبر 24, 2021
جمعہ, ستمبر 24, 2021
HomeFact Checksکیا وائرل ویڈیو میں نظرآرہا محل نما گھر افغان کے سابق صدر...

کیا وائرل ویڈیو میں نظرآرہا محل نما گھر افغان کے سابق صدر اشرف غنی کا ہے؟

سوشل میڈیا پر دو مختلف اینگل سے شوٹ کی گئی ویڈیو کے ساتھ صارفین کا دعویٰ ہے کہ طالبان کی جانب سے کابل میں قبضے کے بعد اشرف غنی کے محل نما گھر میں طالبانی کھانا کھا رہے ہیں۔ وہیں کچھ صارفین اسے افغان صدارتی محل بھی بتا کر شیئر کر رہے ہیں۔ 

محل نما گھر کے وائرل ویڈیو  ساتھ کئے پوسٹ کا اسکرین شارٹ
محل نما گھر کے وائرل ویڈیو کے پوسٹ کا اسکرین شارٹ

سوشل میڈیا پر ایک محل کے اندر کے دو ویڈیوز خوب گشت کر رہے ہیں۔ جس میں کچھ لوگ خوبصورت صوفے اور قالین پر بیٹھ کر کچھ کھاتے پیتے ہوئے نظر آ رہے ہیں۔ ویڈیوز کو کچھ یوزرس صدارتی محل کا بتا رہے تو کچھ اشرف غنی کے محل کا بتا رہے ہیں۔ درج ذیل میں آپ یک بعد دیگرے وائرل پوسٹ دیکھ سکتے ہیں۔

کراؤڈ ٹینگل پر جب ہم نے صدارتی محل کے حوالے سے کیورڈ سرچ کیا تو ہمیں پتا چلا کہ اس موضوع پر پچھلے 3 دنوں میں 62,893 فیس بک صارفین تبادلہ خیال کر چکے ہیں۔ جس کا اسکرین شارٹ درج ذیل میں موجود ہے۔

Fact Check/Verification

افغانستان کے سابق صدر اشرف غنی کے محل کے حوالے سے وائرل ویڈیو کی سچائی جاننے کے لئے ہم نے اپنی ابتدائی تحقیقات کا آغاز کیا۔ سب سے پہلے ہم نے وائرل ویڈیو کو انوڈ کی مدد سے کیفریم میں تقسیم کیا اور ان میں سے کچھ فریم کو گوگل ریورس امیج سرچ کیا۔ لیکن کچھ بھی اطمینان بخش جواب نہیں ملا۔ پھر ہم نے کچھ کیورڈ سرچ کیا۔ جہاں ہمیں پاکستان کی معروف نیوز ویب سائٹ نوائے وقت پر وائرل ویڈیو کے کیفریم سے ملتی جلتی تصویر کے ساتھ 16 اگست کی ایک خبر ملی۔ جس کے مطابق وائرل ویڈیو افغانستان کے جنرل عبدالرشید دوستم کے محل نما گھر کی ہے۔

پھر ہم نے جب جنرل عبدالرشید دوستم کے حوالے سے کیوڈر سرچ کیا تو ہمیں وائرل ویڈیو سے متعلق نیوز18، ری پبلک بھارت اور بول نیوز کے آفیشل یوٹیوب چینل پر وائرل ویڈیو ملا۔ ویڈیو کے ساتھ دی گئی جانکاری کے مطابق افغانستان کے مزار سٹی میں موجود گورنر جنرل عبدالرشید دوستم کے گھر میں طالبانی لطف اندوز ہو رہے ہیں۔ ان رپورٹس سے واضح ہو چکا کہ وائرل ویڈیو افغان کے سابق صدر اشرف غنی یا صدارتی محل کا نہیں ہے۔ بلکہ جنرل دوستم کے گھر کا ویڈیو ہے۔

اس ویڈیو کے بارے میں باریکی سے جاننے کے لئے ہم نے اپنی تحقیقات میں مزید اضافہ کرتے ہوئے فیس بک ایڈیوان سرچ کی مدد سے کیورڈ سرچ کیا۔ جہاں ہمیں مؤيد سالم الجحيشي نامی فیس بک پیج پر دونوں وائرل ویڈیوز ملے۔ جس میں دی گئی جانکاری کے مطابق طالبان نے جنرل عبدالرشید دوستم کے محل پر قبضہ کر لیا ہے۔ بتا دوں کہ اس ویڈیو کو 14 اگست کو 1:34 منٹ پر شیئر کیا گیا تھا۔

جب ہم نے کابل صدارتی محل کے حوالے سے کیورڈ سرچ کیا تو ہمیں دی ٹیلی گراف اور الجزیرہ نیوز کے یوٹیوب چینل پر ایک دوسرا ویڈیو ملا۔ جس میں جانکاری دی گئی کہ کابل کے صدارتی محل میں طالبان داخل ہو گئے ہیں۔ لیکن اس ویڈیو میں نظر آرہی عمارت کا اندرونی حصہ وائرل ویڈیو سے مختلف ہے۔ وائرل ہورہی دونوں ہی ویڈیو افغان کے صدارتی محل کی نہیں ہیں بلکہ افغان کے جنرل دوستم کے گھر کے اندرونی حصہ کی ہیں۔

Conclusion

 نیوز چیکر کی تحقیقات میں یہ ثابت ہوتا ہے کہ محل نما گھر کے دونوں ہی وائرل ویڈیوز افغان کے صدارتی محل یا اشرف غنی کے گھر کی نہیں ہیں، بلکہ افغان کے جنرل عبدالرشید دوستم کے گھر کی ہیں۔ 

Result: False


Our Sources

nawaiwaqt.com.pk

R.Bharat

BolNews

News18En

Facebook

Aljazeera

نوٹ:کسی بھی مشتبہ خبرکی تحقیق،ترمیم یا دیگرتجاویز کے لئے ہمیں نیچے دئیے گئے واہٹس ایپ نمبر پر آپ اپنی رائے ارسال کر سکتےہیں۔

9999499044

Mohammed Zakariyahttps://newschecker.in/ur
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his Master in Mass communication and Journalism from Lucknow University.Lucknow

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular