بدھ, اکتوبر 5, 2022
بدھ, اکتوبر 5, 2022

HomeFact Checkکنہیا کمار کو مولانا بتاکر سوشل میڈیا پر کیوں کیاجارہاہے وائرل؟سچ جاننے...

کنہیا کمار کو مولانا بتاکر سوشل میڈیا پر کیوں کیاجارہاہے وائرل؟سچ جاننے کے لئے پڑھیئے ہماری تحقیق

دعویٰ

واہ!واہ! واہ!

مولانا کنہیا کمار کا ویڈیو سب کے سامنے آیا ہے۔جس میں وہ ہندو مذہب کی برائی کر تے ہوئے سب سے اسلام قبول کرنے کی اپیل کررہے ہیں۔

ہماری کھوج

جے این یو طلباء یونین کے سابق صدر کنہیا کمارہمیشہ کسی نہ کسی مسائل کو لے کر میڈیا میں چھائے رہتے ہیں۔ان دنوں کنہیاکمار کا ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہورہاہے۔جس میں دعویٰ کیا جارہاہے کہ کنہیا ہندومذہب کی برائی کررہے ہیں اور اسلام کی طرف لوگوں کو مدعو کررہے ہیں کہ لوگ اسلام قبول کر لیں۔دراصل فلم ساز ویویک رنجن انگنیہوتری نے کنہیا کا یہ ویڈیو ٹویٹر پر شیئر کیا ہے۔جس کے بعد سے یہ ویڈیو چرچے میں آیا۔واضح رہے کہ ویڈیو میں یہ بھی سنائی دے رہاہے کہ مسلمانوں کو بھارت چھوڑ کرجانا ہوتا تو وہ انیس سو سینتالیس میں ہی چلے جاتے۔ویویک کے اس ٹویٹ کو تین ہزار سے زائد لوگوں نے شیئر اور لائک کیاہے۔سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیو کو دیکھنے سننے کے بعد ہم نے ابتدائی کھوج شروع کی۔جہاں ہمیں پتا چلا کہ یہ ویڈیو دوہزار اٹھارہ میں بھی خوب وائرل کیاگیا تھا۔جو مندرجہ ذیل میں دیکھا جاسکتا ہے۔

 

سوشل میڈیا سے ملی جانکاری کے بعد ہم نے وائرل ویڈیو کو کچھ کیورڈ کی مدد سے یوٹیوب پر سرچ کیا۔اس دوران ہمیں ون چینل پر چونتیس منٹ اکتیس سکینڈ کا ایک ویڈیو ملا۔جوستائیس اگست دوہزار اٹھارہ میں اپلوڈ کیاگیا تھا۔ویڈیوکے پیچھے لگے بینر سے ہمیں پتا چلا کہ آل انڈیا تنظیم انصاف کی جانب سے “گفتگو کنہیاکمارسے” کے عنوان پر ایک پروگرام کیاگیا تھا۔جہاں کنہیا مسلم سماج کے لوگوں کے ساتھ گفتگو کررہے ہیں۔ پھر ہم نے پورے ویڈیو کو غور سے سنا۔لیکن کہیں بھی کنہیا نے ہندومذہب کی برائی کرتے ہوئے یا اسلام کی طرف لوگوں کو مدعو کرتے ہوئے نہیں سنائے دئے۔چنانچہ اس سے واضح ہوچکا کہ ویڈیو کے الگ الگ حصے کو اڈیٹ کر کے پینتیس سکینڈ کا متنازع ویڈیو بنا کر عوام کے سامنے پیش کیاگیا۔تاکہ عوام گمراہ ہو اور آپسی لڑائی میں الجھ جائے۔

نیوزچیکر کی تحقیق میں یہ ثابت ہوتا ہے کہ کنہیاکمار کا وائرل ویڈیو ایک سال پرانہ ہے۔ویڈیو کے ساتھ چھیڑچھاڑ کی گئی ہے اور ان کے خطاب کو غلط انداز میں عوام کے سامنے پیش کیا گیا ہے۔کنہیا نے کہیں بھی ہندؤں کو اسلام قبول کرنے کی اپیل نہیں کی ہے۔

 

ٹولس کا استعمال

کیورڈ سرچ

یوٹیوب سرچ

نتائج:فیک نیوز(غلط دعویٰ)

نوٹ:کسی بھی مشتبہ خبرکی تحقیق،ترمیم یا دیگرتجاویزکے لئے ہمیں نیچے دئیے گئے واہٹس ایپ نمبر پر آپ اپنی رائے ارسال کر سکتےہیں۔۔

 WhatsApp -:9999499044

 

Mohammed Zakariya
Mohammed Zakariya
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation from Lucknow University.
Mohammed Zakariya
Mohammed Zakariya
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation from Lucknow University.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular