منگل, دسمبر 7, 2021
منگل, دسمبر 7, 2021
HomeFact Checkصومالیہ کے اسکول میں کرونا سے بچاؤ کے لئے سماجی فاصلے کا...

صومالیہ کے اسکول میں کرونا سے بچاؤ کے لئے سماجی فاصلے کا یہ اہتمام پرتگال کا ہے

سوشل میڈیا پر ڈائننگ حال کی ایک تصویر گردش کر رہی ہے۔ صارفین کا دعویٰ ہے کہ “کرونا سے بچاؤ کے لئے صومالیہ کے اسکول میں بچوں کے لئے انتظام کیا گیا ہے، جس کی یہ تصویر ہے”۔

صومالیہ کے اسکول میں کرونا سے بچاؤ کے لئے سماجی فاصلے کا انتظام
وائرل پوسٹ کا اسکرین شارٹ

صومالیہ برّاعظم افریقہ کا ایک ملک ہے۔ جو غربت، پسماندگی، تعلیم کی کمی اور صحت عامہ کی سہولیات کی کمی جیسے مسائل سے جوجھ رہا ہے۔2017 کی ایک میڈیا رپورٹ کے مطابق صومالیہ کو دنیا کا سب سے کرپٹ ملک بتایا گیا تھا۔

ایسے میں سماجی فاصلے کے اہتمام کے ساتھ ڈائننگ ٹیبل والے کمرے کی تصویر کو صومالیہ کے اسکول کا بتاکر شیئر کیا جا رہا ہے۔ صارفین کا دعویٰ ہے کہ اس طرح کا خوبصورت انتظام صومالیہ کے ایک اسکول میں بچوں کے لئے کیا گیا ہے۔ بتادوں کہ اس تصویر کو زیادہ تر صارفین عربی کیپشن کے ساتھ شیئر کر رہے ہیں۔

کراؤڈٹینگل کے مطابق اس موضوع پر 256 ٹویٹر صارفین تبادلہ خیال کر چکے ہیں۔

Fact Check/ Verification

صومالیہ کے اسکول کے حوالے سے وائرل تصویر کی سچائی جاننے کے لئے ہم نے اپنی ابتدائی تحقیقات شروع کی۔ سب سے پہلے تصویر کو گوگل ریورس امیج سرچ کیا۔ اس دوران ہمیں اسکرین پر اسپینش زبان میں کچھ لکھا ہوا نظر آیا ساتھ میں متعدد لنک بھی فراہم ہوئے۔

پھر ہم نے اسکرین پر ملی جانکاری سے متعلق کیورڈ سرچ کیا۔ جہاں ہمیں ایک فیس بک پوسٹ ملا۔ جس میں اس تصویر کو پُرتگال کے ایک اسکول کے کینٹن کا بتایا گیا ہے۔

کیا سچ میں ڈائننگ ٹیبل والی تصویر صومالیہ کے اسکول کی ہے؟

سرچ کے دوران ہمیں انٹینا3 اور یونیکا نامی ویب سائٹ پر وائرل تصویر ملی، جو رومانی اور ہسپانوی زبان میں تھی۔ ان رپورٹس کو 25 اور 23 ستمبر 2020 کو شائع کیا گیا ہے۔ ترجمہ کرنے پر پتا چلا کہ یہ تصویر کرونا وائرس سے بچاؤ کے لئے اسکولوں میں سماجی فاصلے کے پیش نظر اسکول کی کینٹن میں کئے گئے انتظام کی ہے۔ البتہ تحقیقات میں یہ واضح نہیں ہو سکا کہ یہ تصویر پرتگال کے کس اسکول کا ہے۔

وائرل تصویر ہمیں مارک ویڈل نامی آفیشل ٹویٹر ہینڈل پر بھی ملی۔ جس میں بھی اس تصویر کو پرتگال کا بتایا گیا ہے۔

بتادوں کہ صومالیہ برّاعظم افریقہ کا ایک ملک ہے اور پرتگال یورپ کا ایک ملک ہے۔ اس سے واضح ہوتا ہے کہ تصویر کو گمراہ کن دعوے کے ساتھ شیئر کیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: کیا رودراکش پہنّے کی وجہ سے عیسائی استاذ نے ہندو طالب علم کی پٹائی کی؟

Conclusion

نیوز چیکر کی تحقیقات میں یہ ثابت ہوتا ہے کہ وائرل تصویر صومالیہ کے مدرسے کی نہیں ہے۔ بلکہ کرونا وائرس سے بچنے کے لئے سماجی فاصلے کے پیش نظر پرتگال کے ایک اسکول میں ڈائننگ ٹیبل کے کئے گئے انتظام کی ہے۔

Result: Misleading


Our Sources

Facebook

unica.md

antena3


نوٹ:کسی بھی مشتبہ خبرکی تحقیق،ترمیم یا دیگرتجاویز کے لئے ہمیں نیچے دئیے گئے واہٹس ایپ نمبر پر آپ اپنی رائے ارسال کر سکتےہیں۔

9999499044

Mohammed Zakariyahttps://newschecker.in/ur
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his Master in Mass communication and Journalism from Lucknow University.Lucknow
Mohammed Zakariyahttps://newschecker.in/ur
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his Master in Mass communication and Journalism from Lucknow University.Lucknow

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular