منگل, جون 25, 2024
منگل, جون 25, 2024

ہومFact CheckWeekly Wrap میں وائرل پوسٹ کی اہم تحقیقات پڑھیں

Weekly Wrap میں وائرل پوسٹ کی اہم تحقیقات پڑھیں

Authors

Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation in Mass Communication & Journalism from Lucknow University.

آج ہم آپ کےلیےہفتہ واری خبر (Weekly Wrap) میں کچھ ایسے وائرل کی حقائق کو سامنے رکھیں گے ۔جو اس ہفتے سوشل میڈیا پر کافی وائرل ہوا ہے۔درج ذیل میں یک بعد دیگرے اسٹوری کو ملاحظہ فرمائیں۔

کیا سچ میں تبلیغی جماعت کے لوگوں نے پی ایم مودی کا جنم دن منایا؟

دہلی مرکز نظام الدین کے اندر بی جے پی لیڈرمولانا صہیب قاسمی نے پی ایم مودی کا جنم دن نہیں منایا بلکہ مرکز کی دیوار سے متصل وزیراعظم کی تصویر لگا کر کیک کاٹا تھااور ملک کےلئےدعاء خیر کی تھی ۔سوشل میڈیا پر کیا گیا دعویٰ فرضی ہے۔

پڑھیں پوری خبر۔

کیا لداخ میں ہندوستانی فضائیہ کاایم آئی۔17ہیلیکاپٹر حادثےکا شکار ہوگیا ہے؟

ہندوستانی فضائیہ کے ایم آئی -17ہیلی کاپٹر کی وائرل تصویر 2018 کی ہے۔یہ حادثہ لداخ میں نہیں بلکہ اتراکھنڈ کے کیدارناتھ میں پیش آیا تھا جہاں لوہے کےراڈ سے ٹکرا کر ہیلی کاپٹر حادثے کا شکار ہوگیا تھا۔

پوری خبر پڑھیں۔

بنگلہ دیشی شادی شدہ مسلم جوڑے کو لوجہاد سےکیوں کیا جارہا شیئر؟

وائرل تصاویر کا لوجہاد اور ہندوستان کے کیرلہ سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔بلکہ یہ تصویر بنگلہ دیش کی سمیہ حسن نامی لڑکی کی ہے۔رپوٹ سے کہیں بھی یہ ثابت نہیں ہوتا ہے کہسمیہ حسن نے ہندو مذہب چھوڑ کر اسلام قبول کیا ہے۔

یہاں پڑھیں پوری خبر۔

کیا سچ میں سعودی عرب میں مرد و خواتین نے سنیماگھرکے باہر لگائی بھیڑ؟

وائرل ویڈیو تقریباًڈیڑھ سال پرانہ ہے اور ویڈیو میں نظر آرہی بھیڑ سعودی عرب کے حفرالباطن کےدکان میں مفت سامان کا اعلان کیاگیا تھا۔جس کے بعد وہاں مرد وخواتین کی بھیڑ جمع ہوگئی تھی۔

یہاں پڑھیں پوری خبر۔

کیا سچ میں اداکاراعجازخان نے ہندؤں کو مجروح کرنے والا بیان دیا ہے؟

سوشل میڈیا پر اداکار اعجاز خان کے حوالے سے کیا گیا دعویٰ بالکل فرضی ہے۔انہوں نے خود ویڈیو جاری کر کے اس بات کی شہادت دی ہے کہ وہ ہندؤں کے مجروح کرنےوالا بیان نہیں دیا ہے۔جوپوسٹر شیئر کیاجارہا ہے وہ فرضی ہے۔

پڑھیں یہاں پوری خبر۔

نوٹ:کسی بھی مشتبہ خبرکی تحقیق،ترمیم یا دیگرتجاویز کے لئے ہمیں نیچے دئیے گئے واہٹس ایپ نمبر پر آپ اپنی رائے ارسال کر سکتےہیں۔

 9999499044

Authors

Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation in Mass Communication & Journalism from Lucknow University.

Mohammed Zakariya
Mohammed Zakariya
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation in Mass Communication & Journalism from Lucknow University.

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

Most Popular