پیر, اکتوبر 25, 2021
پیر, اکتوبر 25, 2021
HomeUrduکیاابوظہبی کے ولی عہد محمد بن زاید نے لگایا جئے سیارام کا نعرہ۔پڑھیئے...

کیاابوظہبی کے ولی عہد محمد بن زاید نے لگایا جئے سیارام کا نعرہ۔پڑھیئے نیوزچیکر کی تحقیق۔

دعویٰ

ابوظہبی میں کراؤن پرنس نےجئے شری رام کا جاپ کیااور مسلم خواتین نے رامائن کو اپنے سر پر رکھا۔لاکھوں ہندوؤں کے احترام میں بھگوان رام کے لئے دنیا بھر میں اس طرح پوجا کی جاتی ہے۔

تحقیقات

گیتِکا سوامی نامی ٹویٹر ہینڈل سے ایک ویڈیو شیئر کیاگیاہے۔جس میں دعویٰ کیا جارہاہے کہ ابوظہبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زاید النہیان ایک بڑے ہجوم کے سامنے ہندومت کے دعائیہ کلمات پکار رہے ہیں اورمسلم خواتین رامائن کو اپنے سر پراٹھائے ہوئےہیں۔

اسی سے متعلق اسی دعوے کے ساتھ ایک ویڈیویوٹیوب پر ملا۔ساتھ ہی تحقیق کے دوران سات مہینے پہلے کا فیس بک پر ایک پوسٹ بھی ملا۔جس میں یہی ویڈیو شیئر کیا گیا ہے۔لیکن اس میں جودعوے کئے گئے ہیں وہ اس سے مختلف ہے۔

جب ہم نے تفتیش سِرے سے شروع کی۔تب ہمیں ایک ویڈیو میں رام چرِت مانس کے کتھاکارموراری باپو بھی نظر آرہے تھے۔جوکہ گذشتہ سال سچن سنگھ نامی ٹویٹر ہینڈل سےٹویٹ کیاگیاتھا۔

ان تحقیقات کو مزید جاری رکھتے ہوئے ہم نے سب سے پہلے کچھ کیورڈس کا سہارا لیا۔جس کی مدد سے ہم نےابوظہبی کےولی عہد شیخ محمد بن زاید النیہان کے تعلق سے پاکستانی ویب پورٹل ڈیلی قدرت پر ایک خبرملی۔ جس میں لکھا ہے کہ شیخ محمد بن زاید نے کبھی اس طرح کی ہندو مذہبی تقریب میں شرکت ہی نہیں کی۔مزید یہ کہ جو صاحب ویڈیو میں نظر آرہے ہیں وہ متحدہ عرب امارات سے تعلق رکھنے والے ایک کالم نگار سلطان سعود القاسمی ہیں۔

وہیں تحقیق کے دوران ہمیں موراری باپو کے یوٹیوب چینل سے ایک ویڈیو ملا۔جس میں بھی زاید النہیان نظر نہیں آرہے ہیں۔

ان تحقیقات سے ثابت ہوتاہےکہ ابوظہبی میں ہوئے موراری باپو کے تقریب میں شیخ محمد بن زاید النہیان نے ہندومت کے دعائیہ کلمات”جئے سیارام” نہیں بولا تھا۔بلکہ کالم نگار سلطان سعود القاسمی نےتقریب کے دوران ہندومت کے دعائیہ کلمات جئے سیارام پکاراتھا۔ وہیں مسلم خواتین کےتعلق سے کہی گئی بات بھی جھوٹھی ثابت ہوئی۔رامائن کواپنے سرپر رکھنے والی مسلم خواتین نہیں بلکہ تقریب انعقاد کرنے والےشخص کی بیٹیاں تھی۔۔

ٹولس کا استعمال

ٹویٹرایڈوانس سرچ

یوٹیوب سرچ

فیس بک سرچ

گوگل کیورڈ س سرچ

نتائج: جھوٹی خبر

Rajneil Kamath
Rajneil began his career in Google with Adwords Content Operations, moved to sales and then to Public Policy and Government Affairs. During his tenure at Google, he got a first-person view of content policy, community guidelines, product policy, and other public policy issues. Post his stint at Google, he founded a technology company before establishing Newschecker. He calls himself a product of the internet and mobile era and is determined to combat disinformation online. He looks after the day to day affairs and management of the organisation and does not participate in the editorial decisions of Newschecker.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular