جمعہ, جولائی 19, 2024
جمعہ, جولائی 19, 2024

ہومFact CheckFact Check: پاکستانی لیڈر آصف علی زرداری کی وفات کی خبر فرضی...

Fact Check: پاکستانی لیڈر آصف علی زرداری کی وفات کی خبر فرضی نکلی

Authors

Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation in Mass Communication & Journalism from Lucknow University.

Claim

فیس بک پر پاکستان کے سابق صدر آصف علی زرداری کی وفات کے حوالے سے خبریں گردش کر رہی ہیں۔ فیس بک پر اس دعوے کے ساتھ جیو نیوز کی ایک ویڈیو رپورٹ بھی شیئر کی جا رہی ہے۔ جس کے ساتھ کیپشن میں لکھا ہے کہ “دوپہر 2 بجے کی ہیڈلائنز – 3 مئی 2023، انا للہ وانا آلہ راجعون آصف علی زرداری وفات پا گئے”۔

آصف علی زرداری کی وفات نہیں ہوئی ہے۔

Fact

آصف علی زرداری کی وفات کے حوالے سے کئے دعوے کی سچائی جاننے کے لئے ہم نے سب سے پہلے  پاکستان پیپلز پارٹی کے آفیشل سوشل میڈیا ہینڈل کو کھنگالا۔ جہاں ایسے کئی پوسٹ فراہم ہوئے، جن میں پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرینز کے صدر آصف علی زرداری کا 2بجکر 28 منٹ پر تازہ بیان شیئر کیا گیا ہے۔ اس سے معلوم ہوتا ہے کہ وہ ابھی باحیات ہیں۔

Courtesy: Twitter @MediaCellPPP

اس کے علاوہ ہم نے آصف علی زرداری کی بیٹی آصفہ بھٹو زرداری اور بختاور بھٹو زرداری کے آفیشل ٹویٹر اور انسٹاگرام ہینڈل کو بھی کھنگالا، لیکن وہاں بھی ایسی کوئی جانکاری موجود نہیں تھی، جن میں آصف علی زرداری کی وفات کا ذکر ہو۔ اس کے علاوہ ہم نے گوگل پر بھی کیورڈ سرچ کیا، لیکن آصف علی زردای کی موت سے متعلق کوئی رپورٹس نہیں ملیں۔

یہ بھی پڑھیں: پاکستان کے سابق صدر آصف ذرداری کی علالت کی خبر بے بنیاد

Result: False

Our Sources
Tweet by MediaCellPPP on

نوٹ: کسی بھی مشتبہ خبر کی تحقیق، ترمیم یا دیگر تجاویز کے لئے ہمیں واہٹس ایپ نمبر 9999499044 پر آپ اپنی رائے ارسال کرسکتے ہیں۔

Authors

Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation in Mass Communication & Journalism from Lucknow University.

Mohammed Zakariya
Mohammed Zakariya
Zakariya has an experience of working for Magazines, Newspapers and News Portals. Before joining Newschecker, he was working with Network18’s Urdu channel. Zakariya completed his post-graduation in Mass Communication & Journalism from Lucknow University.

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

Most Popular